نواز شریف سے ان کی والدہ شمیم بیگم ، شہباز شریف ، حمزہ شہباز کی ملاقات

اڈیالہ جیل میں قید سابق وزیر اعظم انواز شریف سے ان کی والدہ شمیم بیگم ، شہباز شریف ، حمزہ شہباز اور شریف خاندان کے دوسرے افراد نے ملاقات کی۔

ایون فیلڈ ریفرنس میں سزا پانے والے سابق وزیر اعظم نواز شریف اور مریم نواز سے ملاقات کے لیے شہبازشریف ، ان کی والدہ ، حمزہ شہباز اور خاندان کے دوسرے افراد خصوصی طیارے سے راولپنڈی پہنچے اور سیدھے اڈیالا جیل گئے۔

ذرائع کے مطابق شہبازشریف، ان کی والدہ کی نوازشریف اور مریم نواز سے ملاقات سپرنٹنڈنٹ جیل کے کمرے میں کرائی گئی۔

ایک گھنٹے سے زائد وقت تک جاری رہنے والی ملاقات میں قانونی جنگ اور آئندہ کی سیاسی حکمت عملی پر بات چیت کی گئی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ والدہ نے نوازشریف کو پیار کیا اور دعائیں دیں۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو میں نوازشریف کی والدہ نےکہا کہ ان کا بیٹا ٹھیک ہے مگر گھر گھر ہوتا ہے، ان کو اللہ سے انصاف کی امید ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ مریم نواز کے داماد راحیل منیر اور بیٹی مہرالنساء بھی ملاقات کےلیے اڈیالہ جیل پہنچے اور کیپٹن ریٹائرڈ صفدر سے ملاقات کی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ دونوں اپنے ساتھ کھانا ، پھل اور کپڑے لائے تھے ۔

یاد رہے کہ 6 جولائی کو احتساب عدالت نے ایون فیلڈ ریفرنس میں سابق وزیراعظم نواز شریف کو 11 اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کو 8 جب کہ داماد کیپٹن (ر) صفدر کو ایک سال قید کی سزا سنائی۔

احتساب عدالت نے فیصلے میں نوازشریف کو 80 لاکھ پاؤنڈ اور مریم نواز کو 20 لاکھ پاؤنڈ جرمانہ بھی کیا اور ایون فیلڈ اپارٹمنٹس کو ضبط کرنے کا بھی حکم دیا جب کہ عدالت نے کیپٹن (ر) صفدر پر جرمانہ نہیں کیا۔

عدالتی فیصلے کے بعد سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز گزشتہ روز لندن سے واپسی لاہور پہنچے جہاں انہیں جہاز سے ہی نیب نے گرفتار کرکے اسلام آباد منتقل کیا۔

نواز شریف اور ان کی بیٹی کو اڈیالہ جیل منتقل کیا گیا جہاں وہ اپنی سزا پوری کررہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں