وزارتیں کی تقسیم ؟ پاکستان تحریک انصاف نے اہم فیصلہ

اسلام آباد: کفایت شعاری و سادگی کے اعلان کے بعد عمران خان نے ایک اور بڑا فیصلہ کر لیا،ابتدا میں وفاقی وزرا کی تعداد زیادہ اور وزرائے مملکت کی تعداد کم ہوگی، وفاقی کابینہ کی اولین ترجیح سادگی اور کفایت شعاری ہوگی، وفاقی کابینہ میں زیادہ تعداد ارکان قومی اسمبلی کی ہوگی۔

جیو نیوزکے مطابق ابتدا میں وفاقی وزرا کی تعداد زیادہ اور وزرائے مملکت کی تعداد کم ہوگی، وفاقی کابینہ کی اولین ترجیح سادگی اور کفایت شعاری ہوگی، وفاقی کابینہ میں زیادہ تعداد ارکان قومی اسمبلی کی ہوگی،ذرائع نے دعویٰ کیا کہ ایم کیوایم کا ایک وزیرہوگا، بعد میں ایک مشیرلیاجائے گا، اس حوالے سے تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کے کہنے پر عمران اسماعیل کل ایم کیو ایم پاکستان سے اہم ملاقات کریں گے، عمران اسماعیل کووزارت کیلئے ایم کیو ایم سے معاملات طے کرنےکاٹاسک دے دیا گیا ہے ،ذرائع نے کہا کہ ایم کیوایم کوپورٹس اینڈشپنگ ، محنت وافرادی قوت کی وزارتیں دیے جانےکافیصلہ کیا گیا ہے۔

ذرائع نے مزید کہا کہ مسلم لیگ ق کے چودھری پرویز الہٰی پنجاب اسمبلی میں اسپیکر ہوں گے، مرکز میں مسلم لیگ ق کو کوئی وزارت نہیں ملے گی،بلوچستان عوامی پارٹی مرکزمیں پی ٹی آئی کی حمایت کرے گی،تحریک انصاف بدلے میں بلوچستان میں بی اے پی کی حمایت کرے گی، جس کے بعد مرکز میں بی اے پی کو ایک وزارت ملنے کا امکان ہے، جس کے بدلے میں بلوچستان حکومت میں تحریک انصاف کو دو وزارتیں ملنے کا امکان ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں