پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے لانگ مارچ اور چارٹر آف ڈیمانڈ کے حوالے مشاورتی اجلاس ! صدر اے یو جے طاہر حسین شاہ

ایبٹ اباد ( ہندکو ٹی وی ) ایبٹ آباد  یونین آف جرنلسٹس کی ایگزیکیوٹو کمیٹی کا اجلاس اے یو جے کے صدر  سید طاہر حسین شاہ  کی صدارت میں ایبٹ آباد  پریس کلب میں منعقد ہوا۔اجلاس مین اسٹیٹ سیکرٹریpfuj جنرل محمد شاہد چوہدری , اے یو جے کے سینیئر نائب صدر سہیل عباسی۔ نائب صدر طاہر محمود، جنرل سیکریٹری عاطف قیوم ، اسٹیٹ سیکریٹری ایم اے تنولی ، جوائنٹ سیکریٹری جمعہ خان   میمبراں اے یو جے  نے شرکت کی۔ اجلاس میں پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کے لانگ مارچ اور چارٹر آف ڈیمانڈ کے حوالے مشاورت کی گٸی، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے اے یو جے کے صدر سید طاہر حسین شاہ نے کہا قرآن پاک کی سورہ القلم میںاللہ تعالیٰ نے قلم کی قسم کھائی اللہ تعالیٰ نے قلم کو علم کی اشاعت کا ذریعہ بنایا ہے اس لئے صاحب قلم کو ناموس قلم کا ہر حال میں لحاظ و پاس رکھنا چاہیے اور قلم سے اخلاق و شرافت کیخلاف کوئی بات نہیں لکھنی چاہیے۔صحافت  سے وابستہ افراد کی مشکلات میں  اضافہ ہو چکا ہے ۔ملکی صحافت میں علاقائی صحافی ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتے ہیں، علاقائی صحافیوں کو اپنے فرائض کی انجام دہی میں معاشی مشکلات کے علاوہ پولیس، انتظامیہ، جاگیردار طبقہ سرمایہ داروں،منشیات فروشوں اور قبضہ مافیا کے ہاتھوں سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہےوفاقی و صوبائی حکومتیں صحافیوں کے مسائل کو ترجیہی بنیادوں پر حل کرنے کی یقین دہانیاں کرواتی نظر آتی ہیں لیکن  صحافیوں کے مسائل حل ہونے اور کم ہونے کی بجائے بڑھتے چلے جا رہے ہیں۔ بالخصوص علاقائی صحافی کے مسائل ملک میں  صحافتی تنظیم ہونے کے باوجود آج بھی حل طلب ہیں  علاقوں میں رپورٹنگ کرنے والا صحافی میڈیا ہائوسزکے لئے70 % نیوز سروس‘ اخبارات کی سرکولیشن اور بزنس میں ممدو معاون ثابت  ہے تو وہیں وہ صحت‘بچوں کی تعلیم اور گھر کا چولہا جلانے کے لئے معاشی حالات ٹھیک نہیں   ہے ۔ پی ایف یو جے ملک بھر کے صحافیون کے حقوق کے حصول و تحفظ کے لیئے لانگ مارچ کر رہی ھے۔ جس میں اے یو جے بھرپور شرکت کرے گی۔علاقائی صحافیوں کے حقوق اور مسائل کے حل کے لئے حکومت ‘میڈیا ہائوسزاور صحافتی تنظیم (ہمیں )  عملی  اقدامات اٹھانے کی ضرورت ہے۔ ویج بورڈ صرف بڑے شہروں تک ہے آج تک علاقائی سطح پر نافظ نہیں ہوا۔ علاقائی صحافیوں کیلے کالونی عمل میں لائی جائے۔

ان کے حقوق اور مسائل کا حل  کو یقینی بنانے میں ٹھوس عملی اقدامات اٹھانے چاہیے ادارے  علاقائی صحافیوں کو اعزازیہ دیں۔ صحافتی تنظیم (ہمیں ) چاہیے کہ وہ وکلاء تنظیموں کی طرح علاقائی صحافیوں کے حقوق کے تحفظ کے لئے اپنا مثبت کردار ادا کریں۔

ہم ہر قدم پر پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹ کے ساتھ ہیں۔وہ ہماری آواز پیں۔ آج کے وقت میں میڈیا پاکستاں کی تاریخ کی بدترین دور سے گذر رہا ہے۔

  بڑے شہروں کے صحافیوں کو امداد دینے کا اعلان کرتی ہے وہیں اسے علاقائی صحافیوں کے حقوق و مراعات کا بھی خیال رکھنا چاہیے کیونکہ وہ بھی اسی ریاست کے باسی اور انہی مسائل کا سامنا کر رہے ہیں۔ تمام صحافی جو صرف صحافت کرتے ہیں حکومت 60 /63 عمر کے بعد اولڈ ایج پیشن دیے۔تمام اداروں کو کہا جائے ہر مقامی صحافی کو اس میں شامل کرے

 اجلاس میں مشاورت کے بعد پی ایف یو جے کے چارٹر آف ڈیمانڈ اور جرنلسٹس رائٹس لانگ مارچ کی منظوری دی گئی۔  اجلاس میں اے یو جے کی طرف سے ہزارہ ڈویژن اور صوبہ خیبر پختون خواہ  کے  صحافیوں کے مسائل اور مطالبات کے حوالے سے تجویزیں دی گئی۔ جن کو حتمی طور پر پی ایف یو جے کے چارٹر آف ڈمانڈ کا حصا بنانے کے لیئے مطالبات کی شکل دے دی گئی۔ جو کہ درج ذیل ہیں۔  

ایبٹ آباد  یونین آف جرنلسٹس کے مطالبات 

☆1۔حکومت پرنٹ میڈیا کے تمام صحافیوں اور میڈیا ورکرز کے لئے آٹھویں ویج ایوارڈ پر فوری طور پر عمل کرائے
☆2 ۔ پرنٹ میڈیا کے لیے نیوز پیپرز ایمپلائز ایکٹ کی طرز پر الیکٹرانک میڈیا کے صحافیوں اور میڈیا ورکرز کے لئےقانون سازی کی جائے اور ان کا بھی ویج ایوارڈ تشکیل دیا جائے
☆3: کورونا سے شہید ہونے والے صحافی کی فیملی کو   30 لاکھ روپے مالی امداد کا فوری اعلان کیا جائے ۔
☆4: میڈیا اداروں کے اشتہارات روکے جائیں اور ان کی ادائیگی بھی روکی جائے۔ جبکہ تنخواہوں کی بروقت ادائیگی یقینی بنائی
☆5: آزادی صحافت کا تحفظ ہر قمیت پر یقینی بنایا جائے ۔
☆6:علاقائی سطح پر بھی صحافیوں کی کالونیاں بنانے میں مدد اور کردار ادا کیا جایے۔
☆7: تمام صحافی جن کی عمر 60/63 ہو جو صرف صحافت سے وابستہ ہیں سرکاری سطح پر یا اداروں کو کہا جائے لازمی اولڈ ایج پیشن میں شامل کرے
☆8: تمام مقامی اخبارات جن کے میڈیا ورکرز کو تنخواہیں نہیں دی جا رہی، ان کو   تنخواہیں دی جاۓ۔ ان کے سرکاری  اشتہارات ورکر کی تنخواہ کے ساتھ منسلک کیا جائے 
☆9:وفاقی حکومت کی جانب سے شروع کی گئی پرائم منسٹر ھائوسنگ اسکیم میں تمام صحافیوں کو مفت گھر دیئے جائیں۔ 

طاہر حسین شاہ 
صدر
ایبٹ اباد  یونین آف جرنلسٹس

Abbottabad union of journalist (AUJ)
President AUJ Tahir Shah

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں