ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ایبٹ آباد یاسر خان آفریدی کا تھانہ بکوٹ میں کھلی کچہری سے عوامی سوالات کے جوابات

کوٹ(نوید اکرم عباسی )بکوٹ کی خوبصورت وادی میں پہلی بار آیا ہوں جسطرح یہاں کا علاقہ خوبصورت ھے اسی طرح عوام باشعور ہیں۔ خوشی ہوئی کہ پولیس کی تعریفوں کی جگہ مسائل بیان کیے۔تھانہ بکوٹ کی کشمیر سے باونڈری کی وجہ سے جرائم پیشہ افراد فائدہ اٹھاتے ہیں جائینٹ باونڈری میٹنگ کرکے مسائل پر قابو پائیں گے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ایبٹ آباد یاسر خان آفریدی کا تھانہ بکوٹ میں کھلی کچہری سے تندوتیز عوامی سوالات کے جوابات میں خطاب اس موقع پر بہت بڑی تعداد میں عوام علاقہ کے ساتھ ایس پی انوسٹی گیشن ایبٹ آباد اشتیاق خان ڈی ایس پی گلیات مطلوب شاہ ایس ایچ او بکوٹ نزیر خان کوہالہ پولیس چوکی انچارج ارشد ایوب عمائدین علاقہ سابقہ ایس پی حفیظ الرحمن عباسی سابقہ ڈی ایس پی سردار عبدالستار خان میجر(ر)امتیاز عباسی سابقہ چئیرمین مصالحتی کیمٹی معروف عوامی سماجی شخصیت طاہر آمین عباسی سابقہ ممبران ضلع کونسل سردار الیاس عباسی خالد عباس عباسی غنضفر علی عباسی ممبران بلدیات وسماجی شخصیات شوکت ارباب مہتاب انجم حاجی نثار عباسی عدیل انجم سرفراز عباسی شمس ریاض عباسی گلفراز قریشی سردار فرید عباسی راجہ راشد نثار آکاش عباسی سمیت دوسروں نے شرکت کی اس موقع پر عوام علاقہ نے منشیات فروشی شہریار تشدد کیس چوری کی واردتوں اور سوشل میڈیا جعلی صحافت کے خطرناک ناجائز استعمال سمیت دیگر مسائل کھل کر بیان کئے جس پر ڈی پی او ابیٹ آباد یاسر خان آفریدی نے کہا کہ میری کوشش ھے کہ جتنا عرصہ رہوں عوام کی خدمت کروں تاکہ میرے جانے کے بعد عوام اچھے الفاظ میں یاد رکھیں اور پولیس عوام پر جبر سے نہیں پیار سے کام کرے تاکہ انکے دلوں پر راج کریں انھوں نے کہا کہ مجھے خوشی ہوئی کہ یہاں کے باشعور لوگ تعلیم یافتہ ہیں اور سلیقہ سے اپنی بات کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں انھوں نے کوہالہ پولیس چوکی کے لئے گاڑی چمیالی پولیس چوکی کے لئے مزید موٹر سائیکل اور تھانہ اور چوکی کی نفری بڑھانے کا وعدہ کیا اور چوری کی واردتوں پر قابو پانے کیلئے جیو فنسینگ اور جیو ٹینگینگ اور جدید وسائل کے استعمال اور بکوٹ کے سردار عثمان عباسی اور بیروٹ میں دوکانوں کی چوریوں پر ٹیم بنا کر فوری کام کرنے کی ھدایات جاری کیئں ۔یاسر خان آفریدی نے کہا کہ ڈی آر سی کیمٹی گلیات جسمیں پانچ ممبران تھانہ بکوٹ سے ہیں وہ بھی عوامی مسائل حل کرنے میں کردار ادا کریں اور لیزان کمیٹیاں بھی عوام کے لیے موجود ہیں میرے فون نمبر اور دفتر کے دروازے عوام کےلیئے کھلے ہیں انکو کسی سفارش کی ضرورت نہیں ۔منشیات فروشوں کے خلاف تیسری اب کاروائی میں انٹی نارکوٹکس فورس سے مدد لی جائے گی تاکہ مجرم بار بار عدالتوں سے بچ کر نہ جاسکیں ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں