مقامی حکومتیں عوامی مسائل ان کی دہلیز پر حل کرنے کے لئے مؤثر ثابت ہو ں گی

ایبٹ آباد : مقامی حکومتیں عوامی مسائل ان کی دہلیز پر حل کرنے کے لئے مؤثر ثابت ہو ں گی۔بلدیاتی ترمیمی ایکٹ 2019 کے تحت مقامی حکومتوں کو عوام کے مسائل کے حل کے لئے 36 بنیادی سہولیات فراہم کرنے کے لئے اختیارات نچلی سطح پرمنتقل کئے گئے ہیں۔جن میں مسائل کا تعین کرکے ان کے حل تعمیراتی منصوبوں کو ویلج کونسل کی حد تک بنانے اور ان پر عمل درآمد کا اختیار حاصل ہے۔ویلج کونسل کے اختیارات میں پیدائش سرٹیفکیٹ ،موت ،شادی ،طلاق کی رجسڑیشن ویلج سیکرٹری سے حاصل ہو ں گے۔جب کہ اسی طرح مکانات ،مارکیٹوں ،اور پلازوں کی تعمیر کے لئے ٹی ایم اے کے دفاتر سے نقشہ جات کی منظوری حاصل کی جا سکتی ہے جس کی معیاد 15 سے 30 کا وقت مقرر ہے۔اگر مذکورہ ادارہ مقررہ اوقات کے دوران اپنے فرائض سر انجام نہیں دیتے تو ان کے خلاف ٹی ایم اے اور ٹی ایم او کے پاس اپیل ہو سکتی ہے ۔اسی طرح اس سلسلہ میں پیدائش سرٹیفیکیٹ ،ڈیتھ سرٹیفیکیٹ ،طلاق سرٹیفیکیٹ کے لئے 150 روپے فیس مقرر ہےجب کہ شادی کے سرٹیفیکیٹ کی فیس دو سو روپے ہے ۔ آوارہ کتوں کے خاتمہ کے لئے عام آدمی بھی شکایت کرکے ان کے خاتمہ کے لئے آواز اٹھا سکتا ہے۔اسی طرح شہر کی صفائی کے نظام کو بہتر بنانے کے لئے عوام میں آگاہی ہونا چاہیے،جہاں بلدیاتی ممبران اس میں اپنا کردار ادا کر سکتے ہیں۔وہاں شہریوں کاکام بھی ہے اپنے لئے آواز بلند کریں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں