مفتی کفایت اللہ کی گرفتاری کے خلاف پشاور ہائی کورٹ کے ایبٹ آباد سرکٹ بینچ میں دائر کردہ رٹ پیٹیشن پر سماعت

ایبٹ آباد:جمعیت علماء اسلام ضلع مانسہرہ کے امیر اور سابق ایم پی اے مفتی کفایت اللہ کی گرفتاری کے خلاف پشاور ہائی کورٹ کے ایبٹ آباد سرکٹ بینچ میں دائر کردہ رٹ پیٹیشن پر سماعت آج 29اپریل بروز بدھ ہو گی، تفصیلات کے مطابق مانسہرہ کی ضلعی انتظامیہ نے دو ہفتے قبل 14اپریل مفتی کفایت اللہ کو اپنی جماعت کے ضلعی نائب امیر اور ممتاز عالم دین مولانا سید شاہ عبدالعزیز کے جنازہ میں شرکت کے بعد رات گئے اپنے گھر جاتے ہوئے خاکی کے مقام پر مانسہرہ پولیس نے 16ایم پی او، 33NDMAاور دفعہ 144کی خلاف ورزی پر گرفتار کر لیا، جس پر 15اپریل کو سول جج مانسہرہ نے جوڈیشل ریمانڈ پر 14دنوں کیلئے ڈسٹرکٹ جیل مانسہرہ بھیج دیا۔ 16اپریل کو ضلعی انتظامیہ کے دباؤ پر لوئر کورٹ میں درخواست ضمانت خارج کر دی، جس کے بعد اس گرفتاری کے خلاف پشاور ہائی کورٹ میں رٹ پیٹشن دائر کر دی۔ 21اپریل کو پشاور ہائی کور ٹ کے ایبٹ آباد سرکٹ بینچ نے جسٹس شکیل احمد اور جسٹس احمد علی پر مشتمل ڈبل بینچ کے سامنے بلال خان ایڈووکیٹ اور دیگر نے یہ موقف اختیار کیا کہ اظہار رائے ہر انسان کا بنیادی حق ہے.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں