حکومت نے پرائمری تک ایک نصاب اور کتابوں کو کم کرنے کا وعدہ پورا کر دیا ہے،نجی اور سرکاری اداروں میں ایک نصاب سے یکسانیت پیدا ہونے سے محرومیاں کم ہوں گی

ایبٹ آباد.ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر محمد شوکت نے کہا ہے کہ حکومت نے پرائمری تک ایک نصاب اور کتابوں کو کم کرنے کا وعدہ پورا کر دیا ہے،نجی اور سرکاری اداروں میں ایک نصاب سے یکسانیت پیدا ہونے سے محرومیاں کم ہوں گی،ضلع میں آٹھویں جماعت تک امتحانی شیڈول جاری کردیا ہے جس کے نتائج 30تک جاری کریں گے،نئی داخلہ مہم ضلعی انتظامیہ ،لوکل کمیونٹی اور والدین سے مل کے بھرپور انداز میں چلائی جائے گی،کورونا کی وجہ سے طلبہ کو سخت تعلیمی نقصان پہنچا ہے جس کے ازالہ کے لئے اساتذہ سے مل کر محنت کرینگے،سکولز میں اساتذہ اور عملہ کی کمی کو پورا کرنے کے لئے نئی بھرتیاں میرٹ پر کی گئی ہیں،30ایس ایس ٹی ،مختلف کیڈر میں 119اساتذہ کے انٹرویو مکمل ہو چکے ہیں،209 درجہ چہارم ملازمین اور دوران ڈیوٹی جاں بحق ہونے والوں کے کوٹہ میں 8 جونیئر کلرک،تین لیب اسسٹنٹ سمیت 24 افراد کی بھرتی کی گئی ہے،ڈرائیورز کی خالی آسامیاں بھی جلد پر ہونگی ،اساتذہ کی سنیارٹی لسٹ بھی میرٹ پر بنائی گئی ہے جس کو آویزاں کر دیا ہے،سکولز میں فرنیچر کی کمی کو پورا کرنے کے لئے دو کروڑ دس لاکھ کے فنڈ کی بھی منظوری ہو چکی ،ان خیالات کا اظہار انہوں نے یہاں ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا اس موقع سرکل ایس ڈی اوذ بھی موجود تھے،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر محمد شوکت کا کہنا تھا شہر کے سکولز میں کلاسز کی تعداد بڑھانے کے لئے 15 نئے کلاس روم تعمیر کیے جارہے ہیں جن کے لئے 1کروڑ 90لاکھ فنڈ منظور ہو چکا ہے،فرنیچر کی مد میں فی سکول کے اکاؤنٹ میں 60ہزار منتقل کئے جاچکے ہیں سکولز میں سہولیات یقینی بنانے کے لئے دو کروڑ 10لاکھ کا فنڈ دستیاب ہے اور سکولز سے سرپلس فرنیچر بھی ضرورت والے سکولز میں منتقل کیا جائے گا،تاکہ ذیادہ سے زیادہ فرنیچر کی کمی کو پورا کر سکیں،اسی طرح کلاس روم کی ضروریات کو پورا کرنے کے لئے چاک ،سٹیشنری کی مد میں 19لاکھ 90ہزار کا فنڈ فی کلاس 11 ہزار کے حساب سے سکولز کے اکاؤنٹ میں منتقل ہو چکے ہیں،ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر کا کہنا تھا سکولز کی ترقی اور بہتری کے حکومت کا مکمل تعاون حاصل ہے، ضلع میں 758پرائمری ،83مڈل ،70ہائی اور 18ہائیر سکینڈری سکولز میں 4ہزار 6سو 81اساتذہ اور 12سو 68کلاس فور ڈیوٹی سرانجام دے رہے ہیں جن کی ویکسی نیشن کا سلسلہ بھی جاری ہے، 23سو چار اساتذہ اور 508کلاس فور نےویکسی نیشن کروالی ہے،انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ صوبہ کے مختلف اضلاع ہنگو ،بنوں ،خیبر ،بٹگرام ،ہری پور میں ڈیوٹی سرانجام دی ہے اس چیز کا قائل ہوں کوئی کام دوسرے دن پر نہ جائے اور کوئی فائلز جمع نہ ہو،یہ اخلاقی اور دینی زمہ داری بھی ہے،اسی وجہ سے دفتر میں ہجوم کم ہو چکا ہے اساتذہ اطمینان رکھیں ان کے مسائل ترجیحی بنیاد پر حل ہوتے ہیں،انہوں نے کہا کہ اساتذہ کے مختلف کیڈرز کی سنیارٹی لسٹ مکمل کرنے کے لئے کمیٹی بنائی گئی اور ان پر اپیل کرنے کے لئے مواقع فراہم کئے جب کہ ماضی میں یہ کام دفتری ریکارڈ تک محدود رہتا تھا،انہوں نے کہا کہ تمام کیڈر کی سنیارٹی لسٹ مکمل ہو چکی ہے حق دار کو اس کا حق ملے گا،انہوں نے تمام پرنسپلز اور اساتذہ کو ہدایت کی کہ طلبہ کی کردار سازی اور معیاری تعلیم کی فراہمی میں اپنی صلاحیتوں کو بروئے کا ر لائیں اور کورونا کی وجہ سے ضائع وقت کے ازالہ کے لئے زیادہ سے زیادہ محنت کریں گرمی کی شدت کے باعث سکولز میں اوقات کار تبدیل ہوئے ہیں تاہم کم وقت کو بھی قیمتی بنائیں

One curriculum in all schools

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں