حالیہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ کسی صورت قبول نہیں: پاکستان پٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن کے کے سنئیر ممبر طارق خان تنولی

ایبٹ آباد پاکستان پٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن کے کے سنئیر ممبر طارق خان تنولی نے حالیہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ کسی صورت قبول نہیں حکومت فوری طور پر پٹرولیم مصنوعات میں کمی لائے سابقہ حکومت نے پٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن سے مذکرات کئیے تھے کہ موجودہ صورتحال کے پیش نظر ڈیلر مارجن میں چھ فیصد کا اضافہ کیا جائے نہیں تو تو پٹرول پمپ مالکان پٹرول پمپ بند کرنے پر مجبور ہو جائیں گے ساتھ سمگل شدہ ایرانی ڈیزل کی ملک میں کھلے عام بھر مار کی وجہ ملکی معیشت کو بڑا نقصان ہو رہا ہے زمہ دار محکمے نوٹس لیں حالیہ مہنگاہی کی وجہ سے پٹرول پمپ مالکان کی زندگی اجیرن ہو چکی ہے کمیشن میں اضافہ نہ ہونے کی وجہ سے ٹیکسوں کی بھرمار ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ ہو چکا ہمارا کمیشن وہی پرانا کمیشن ہے فوری طور پر ڈیلر مارجن میں اضافہ کیا جائے چیئرمین پاکستان پٹرولیم ڈیلر ایسوسی ایشن عبدالسمعی خان کے ساتھ ہیں اگر ہمارے مارجن میں اضافہ نہ کیا گیا تو ملک بھر میں پٹرول پمپ بند کرنا پڑھیں گے جسکی زمہ دار حکومت اور وزارت پٹرولیم ہو گی اور سمگل شدہ ایرانی ڈیزل کی کھلے عام فروحت پر حکومت اور وزارت پٹرولیم کو پابندی لگانی چائیے اور اس گھناونے کاروبار سے جو منسلک ہیں انکو کرار واقعی سزا دینی چائیے ایرانی ڈیزل کی وجہ سے حکومت کو اربوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے جسکا خاتمہ وقت کی اہم ضرورت ہے اس وقت ملک بھر کے پٹرول پمپ مالکان پریشان حال ہیں کمیشن وہی پرانا اور مہنگاہی کا طوفان ٹیکسوں کی بھرمار ملازمین کی تنخواہوں میں اضافہ ہو چکا مگر پٹرول پمپ ڈیلر کے کمیشن میں اضافہ نہیں کہا گیا وزارت پٹرولیم فوری طور پر سنجیدگی سے ڈیلر مارجن میں اضافہ کرے اور ملک بھر کے پٹرول پمپ ڈیلر بھی اسی ملک کے شہری ہیں سوتیلی ماں جیسا سلوک ملک بھر کے ڈیلر کے ساتھ نہ کیا جائے سابقہ حکومت کے ایگریمنٹ کے مطابق اور حالیہ پٹرولیم مصنوعات میں سو فیصد اضافے سے پٹرول پمپ مالکان کو کوئ فائیدہ ہیں حالات زندگی ابتر ہو چکے ہیں ملک بھر کے ڈیلر ہو بھی ریلیف دیا جائے اور ڈیلر مارجن میں فوری اضافہ کیا جائے

Protest in Petrolum increased

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں