ایبٹ آباد مانگل میں سیر و تفریح کیلیے گئی ہوئی فیملی کی گاڑی کو آگ لگ گئ

ایبٹ آباد : تھانہ شیروان کی حدود مانگل میں سیر و تفریح کیلیے گئی ہوئی فیملی کی گاڑی کو مانگل کے مقام پر آگ لگ گئ یڈرائیور جھلس کر زخمی پہلے آر ایچ سی شیروان اور بعد ازاں ڈی ایچ کیو منتقل تفصیلات کے مطابق شیروان روٹ کے ڈرائیور پتھیل کے رہائشی ابرار استاد اپنی فیملی کو سیر کیلیئے لے کر مانگل پر گئے ہوئے تھے جہاں پر شارٹ سرکٹ کی وجہ سے گاڑی کو آگ لگ گئی جس گاڑی جل کر خاکستر ہوگئی۔گاڑی کا ڈرائیور جل کر شدید زخمی ہوگیا جسکو طبعی امداد کیلیے آر ایچ سی ہسپتال شیروان لایا گیا جہاں سے ایبٹ آباد ریفر کر دیا گیا ہے۔تاہم باقی لوگوں کو صحیح سلامت بچا لیا گیا۔تناول ایمبولینس کے ڈرائیور کو کالیں کرتے رہے ہیں تاہم ڈرائیور نے کال رسیو کرنے کی زحمت گہوارہ نہیں کی جبکہ RHC سی شیروان کی ایمبولینس بھی ہسپتال میں موجود نہیں تھی عید کی چھٹیوں کی وجہ سے ٹکیسی گاڑیاں بھی دستیاب نہیں تھیں جس وجہ سے مریض کو شیروان سے ایبٹ آباد شفٹ کرنے میں شدید دشواری کا سامنا کرنا پڑا اہلیان علاقہ نے ڈی ایچ ایبٹ آباد سے RHC شیروان کی ایمبولینس کی ہسپتال میں غیر موجودگی کا سخت نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے دوسری جانب اہلیان علاقہ نے چیئرمین تناول ویلفیئر شکیل احمد تنولی فیاض علی شاہ افتخار احمد تنولی نسیم تنولی اور ویلفیئر کے دیگر ممبران درخواست کی ہے کہ تناول ویلفیئر کی ایک ایمبولینس کو RHC شیروان میں کھڑا کیا جائے تاکہ کسی بھی ہنگامی صورتحال میں کسی بھی مریض کو بروقت ریسکیو کیا جاسکے۔۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں