ایبٹ آباد میں بھی سرکاری سبسڈی کے گھی اور چینی کی بھاری کھیپ نجی گھر سے برآمد

ایبٹ آباد: ایبٹ آباد میں بھی سرکاری سبسڈی کے گھی اور چینی کی بھاری کھیپ نجی گھر سے برآمد کر لی گئی ہے،ایک ٹن سے زائد چینی اور 4سو کلو سے زائد گھی کو زونل آفیسر نے تحویل میں لے کے تحقیقات کا آغاز کیا ہے،ماہ رمضان میں حکومت کی جانب سے عوام کو ریلیف میں ملنے والی سستی اشیاء کی ملی بھگت سے فروخت کا سلسلہ تھم نہ سکا،سرکاری ریلیف کا گھی اور چینی کی برآمدگی پر ضلعی انتظامیہ کی بھی دوڑیں لگی رہیں ،معاملہ کو دبانے کے لئے خفیہ ہاتھ بھی متحرک ہو گئے،ماہ رمضان میں یوٹیلٹی سٹورز پر گھی چینی اور آٹا کی خریداری کے لئے عوام لمبی قطاروں میں کھڑے رہنے کے بعد مایوس لوٹ جاتے ہیں،گذشتہ روز مخبر کی اطلاع پر تھانہ میر پور کے ایس ایچ او نے کاغان کالونی کے نجی گھر سے یوٹیلٹی سٹور پر فروخت ہونے والا گھی اور چینی کو برآمد کیا،پولیس زرائع کے مطابق موقع پر چینی سے بھرے 35 بیگ اور گھی کے 30سے زاہد کاٹن موجود تھے جس کو یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کی زونل منیجر نے اپنی موجودگی میں تحویل میں لے لیا،ایبٹ آباد سمیت ہزارہ بھر میں یوٹیلیٹی سٹورز کی رعایتی اشیاء کی ملی بھگت سے فروخت کی شکایات عام ہیں جب کہ دوسری جانب روزہ کی حالت میں یوٹیلٹی سٹورز کے بائر چینی اور گھی کی خریداری کے لئے لمبی قطاریں رہتی ہیں جن میں اکثریت بنا خریداری کے ہی واپس جاتی ہے،دوسری جانب سرکاری سٹورز سے ٹنوں کے حساب سے فروخت کر دیا جاتا ہے،مالی بے قاعدگیوں کی شکایات پر ایف آئی اے کو تحقیات سونپی جائیں تاکہ ماہ رمضان میں غریب عوام کے حق پر ڈاکہ ڈالنے والے قانون کے شکنجے میں آسکیں۔عوامی حلقوں نے بھی یوٹیلٹی سٹورز کارپوریشن کے اعلی حکام سے ہزارہ میں ہونے والی بے قاعدگیوں کا نوٹس لینے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

Govt subsidize oil and sugar recovered in Abbottabad

utility store

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں