خواجہ سراء ہمارے معاشرے کا حصہ ہیں انکے حقوق کے تحفظ کو یقینی بنایا جائے گا، میرویس نیاز

ایبٹ آباد: ڈپٹی انسپکٹر جنرل آف پولیس ہزارہ ریجن میرویس نیاز نے ویژن فاؤنڈیشن کی زیر اہتمام پولیس لائن ایبٹ آباد میں منعقدہ خواجہ سراؤں کے حقوق اور بچوں کی سمگلنگ کی روک تھام کے حوالے سے آگاہی ورکشاپ میں بطور مہمان خصوصی شرکت کی، ورکشاپ کا انعقاد ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ایبٹ آباد ظہور بابر آفریدی کی زیر نگرانی کرونا وائرس سے بچاؤ کی حفاظتی تدابیر کو اپناتے ہوئے ماسک کے استعمال اور سماجی فاصلہ کو برقرار رکھتے ہوئے کم تعداد میں شرکاء کی شرکت کو یقینی بناتے ہوئے ڈی پی او آفس کانفرنس ہال میں منعقد کی گئی جس میں ویژن پاکستان فاؤنڈیشن کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر طاہر علی خیلجی اور ایس پی انوسٹی گیشن ایبٹ آباد اشتیاق خان وغیرہ نے شرکت کی۔ ویژن پاکستان فاؤنڈیشن کے ایگزیکٹو ڈائریکٹر طاہر علی خیلجی نے شرکاء کو خواجہ سراؤں کے حقوق اور بچوں کی سمگلنگ کی روک تھام کے حوالے سے بنائے گئے قوانین اور انکے حوالے سے رونما ہونے والے واقعات کی تفتیش اور دیگر اہم امور کے حوالے سے لیکچر دیااور شرکاء کے سوالات کے جوابات بھی دیئے۔ ڈی آئی جی ہزارہ میرویس نیاز نے ورکشاپ کے شرکاء سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ہزارہ پولیس کی پیشہ ورانہ صلاحیتوں کو مزید اجاگر کرنے کیلئے ایسی ورکشاپس اور سیمینار کا انعقاد کیا جاتا رہے گا۔ خواجہ سراء ہمارے معاشرے کا حصہ ہیں اور انکے حقوق کے تحفظ کو یقینی بنایاجائے گا اس ورکشاپ کے انعقاد کا مقصد بھی یہ ہی تھا کہ تھانہ اور تفتیشی سطح پر پولیس افسران کو انکے حقوق کے تحفظ کیلئے بنائے گئے قوانین کے حوالے سے مکمل آگاہیہو تاکہ معاشرے میں انکے ساتھ پیش آنیوالے مسائل کے حل کو بہتر انداز سے حل کیا جاسکے۔ بچوں کو اغواء کیا جانے اور بعد ازاں سمگلنگ کرنے جیسے واقعات کی روک تھام کے حوالے سے بھی پولیس افسران کو آگاہ ہونا چائیے۔جن پولیس افسران نے اس ورکشاپ میں شرکت کی وہ یہاں سے حاصل ہونیوالی معلومات کو اپنے جونیئر پولیس افسران تک بھی ضرور پہنچائے، ورکشاپ کے اختتام پر ڈی آئی جی ہزارہ نے ورکشاپ کے شرکاء میں سرٹیفکیٹ تقسیم کیئے۔


workshop-on-transgender

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں