ایبٹ آباد میں بھی یتم بچوں کا عالمی دن بڑے جوش سے منایا گیا

ایبٹ آباد : ملک کے دیگر حصوں کی طرح ایبٹ آباد میں بھی یتم بچوں کا عالمی دن بڑے جوش سے منایا گیا،مرکزی تقریب ادارہ تدریس القرآن یتیم ایبٹ آباد میں منعقد کی گئی ،جس میں معروف مذہبی شخصیت جنرل سیکرٹری ایوان تجارت مفتی جعفر طیار مقبول اعوان تھے،جب کہ اس موقع پر ایگزیکٹو رکن ادارہ تدریس القرآن ملک سعید ایڈووکیٹ اور بچے بھی موجود تھے،بچوں سے اظہار یکجہتی کرنے کے لئے دن بھر مختلف پروگرام رکھے گئے اس موقع پر مہمان خصوصی مفتی جعفر طیار مقبول اعوان نے اپنے خطاب میں کہا کہ یتیم کی کفالت آخرت میں نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی رفاقت کی ضمانت ہے،معاشرے میں ان کا حصہ ہے قرآن کریم میں بھی واضح ہے کہ جو حقدار سوال کرے یا نہ کرے ہمارے مال میں ان کا حصہ ہے، ان کی نگہداشت ہمارا مذہبی فریضہ ہے،چیئرمین ادارہ تدریس القرآن یتیم خانہ ایبٹ آباد محمد ساجد اعوان نے بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ ادارہ کا قیام 1940میں عمل میں لایا گیا بنا حکومتی سرپرستی کے چلنے والے ادارہ کی مخیر صاحب استطاعت افراد کی معاونت سے ادارہ میں یتیم بچوں کی زندگی کی تمام ضروریات خوراک،رہائش ،صحت ،مذہبی ودنیاوی تعلیم کی فراہمی کی جاتی ہے،انہوں نے کہا ہے کہ ملک کی 22کروڑ آبادی میں چند ہزار یتیم بچے ہیں،جو صاحب حثیت افراد کی امداد کے منتظر رہتے ہیں انہوں نے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ ایسے اداروں کا ضرور چکر لگائیں اور ان کی ضروریات کا خیال رکھیں،یتیم بچوں کو مالی اور اخلاقی امداد کی ہمہ وقت ضرورت رہتی ہے،ان کی نگہداشت میں اپنا حصہ ضرور ڈالیں، ایگزیکٹو رکن ملک سعید ایڈووکیٹ کا کہنا تھا یتیم بچوں سے اظہار یکجہتی کرنے کے لئے 2013 میں ترکی کے اندر او آئی سی کے اجلاس میں اس دن کو عالمی سطح پر منانے کی قرارداد منظور کی گئی تھی پاکستان میں سینٹ نے 2016اور قومی اسمبلی نے 2018کو 15رمضان المبارک کو یتم بچوں کا دن منانے کی قرار داد کو متفقہ طور پر منظور کیا گیا،انہوں نے کہا کہ انگنت یتیم بچے اپنے مستقبل سے نا آشنا ہیں،اللہ سے جڑنے اور اس کی خوشنودی کا سیدھا اور آسان راستہ یتیم بچوں کی کفالت کرنا ہے۔تقریب کے اختتام پر ادارہ تدریس القرآن اور سماجی سطح پر بہترین خدمات پر جنرل سیکرٹری ایوان تجارت مفتی جعفر طیار مقبول اعوان نے چیئرمین ادارہ ملک ساجد اعوان کو خصوصی شیلڈ بھی دی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں